Black Magic Removal

آسیب جادو کا علاج  اور جا دو کی حقیقت
ہر قسم کے جادو کی کاٹ کے لیے ہم سے رابطہ کریں

حضرت علامہ سعدی علیہ الرحمتہ فرماتے ہیں کہ حضرت سلمان علیہ السلام کے دور حکومت میں شیاطین آسمان پر گھات لگا کر بیٹھ جاتے اور فرشتوں کا کلام کان لگا کر سنتے کہ زمین میں کون کب مرے گا بارش کب ہو گی اور اس قسم کی دیگر باتیں پھر آکر کاہنوں کو بتاتے اور وہ اسی طرح واقع ہو جاتیں۔ ان کے ساتھ بہت سے جھوٹ ملا کروہ باتیں لوگوں نے کتابوں میں لکھ لیں اور لوگوں میں مشہور ہو گیا کہ جنات کو غیب کا علم ہے۔ حضرت سلیمان علیہ السلام نے ان کتابوں کو منگوایااور ایک صندوق میں رکھ کر اپنی کرسی کے نیچے دفن کر دیا۔ اب شیاطین میں سے جو بھی آپ کی کرسی کے نزدیک آتا جل جاتا اور حضرت سلیمان علیہ السلام نے اعلان کروا دیا کہ جو شخص بھی کہے گا کہ شیاطین علم غیب جانتے ہیں تو میں اس کی گردن اڑا دوں گا۔ سلیمان علیہ السلام انتقال فرما گئے اور وہ علما ء بھی گزر گئے جن کو یہ واقعہ معلوم تھا۔ پھر پشت ہا پشت گزر گئیں تو ایک دن وہ شیطان انسانی صورت میں بنی اسرائیل کی ایک جماعت کے پاس گیا اور کہا کہ میں آپکو ایک نہ ختم ہونے والا خزانہ دکھاتا ہوں۔ اس نے ان سے کہاکہ اس کرسی کے نیچے زمین کو کھودو انہوں نے کھودا تو وہ کتابیں نکل آئیں۔ شیطان نے کہا کہ سلیمان علیہ السلام اس جادو کی وجہ سے انسانوں ، جنوں اور پرندوں پر حکومت کرتے تھے۔ پھر بنی اسرائیل میں نسل در نسل مشہور ہو گیا کہ سلیمان علیہ السلام (معاذاللہ) جادوگر تھے۔ حتیٰ کہ جب نبی مکرم صلی اللہ علیہ وسلم مبعوث ہوئے اور آپ نے حضرت سلیمان علیہ السلام کا ذکر انبیاء کرام علیہم السلام میں کیا تو بنی اسرائیل نے اعتراض کیا اور کہا کہ سلیمان تو جادو گر تھے تب اللہ تعالیٰ نے ان کے رد میں آیۃ مبارکہ نازل فرمائی۔ 
ترجمہ ’’ اور انہوں نے پیروی کی اس چیز کی جس کو سلیمان علیہ السلام کے دور میں شیطاطین پڑھا کرتے تھے اور سلیمان علیہ السلام نے کوئی کفر نہیں کیا البتہ شیاطین ہی کفر کرتے تھے۔ وہ لوگوں کو جادو سکھاتے تھے‘‘۔ 
( البقرۃ) تفیسر جامع القرآن ج ۱ ص ۳۵۳)

 

:جادو ( سحر) کا لغوی معنی ٰ

علامہ زبیدی حنفی اپنی کتاب تہذیب میں جادو (سحر) کا معنی ٰ بیان کرتے ہوئے لکھتے ہیں کہ کسی چیز کو اس کی حقیقت سے دوسری حقیقت کی طرف پلٹ دینا جادو ہے ۔ کیونکہ جب جادو گر یا ساحر کسی باطل کو حق کی صورت میں دکھاتا ہے اور لوگوں کے ذہن میں ڈالتا ہے تو وہ چیز اپنی حقیقت کے مغائر ہے تو یہ اس کا جادو ہے۔ 
علامہ ابن منظور اقریقی لسان العرب میں فرماتے ہیں کہ سحر وہ علم ہے جس سے شیطان کا تقرب حاصل کیا جاتا ہے ۔ اور اس کی مدد سے کوئی کام کیا جاتا ہے۔ نظر بندی کو بھی سحر یا جادو کہتے ہیں۔ کہ ایک چیز کسی صورت میں دکھائی دیتی ہے   حالانکہ وہ اس کی اصلی صورت نہیں ہوتی( جیسے دور سے سراب پانی کی طرح دکھائی دیتا ہے) کسی چیز کی کیفیت کو پلٹ دینے کو بھی جادو کہتے ہیں۔ کوئی شخص کسی بیمار کو تندرست کر دے یا کسی بغض کو محبت میں بدل دے تو کہتے ہیں اس نے جادو کر دیا۔ ( لسان العرب ج ۴ ص ۸۴۳)

 

:جادو یا سحر کا شرعی معنی

ٰحضرت علامہ قاضی بیضاوی علیہ الرحمۃ اپنی تفسیر انوارالتنزیل میں سحر کا شرعی معنیٰ بیان کرتے ہوئے فرماتے کہ جس کام کو انسان خود نہ کر سکے اور وہ شیطان کی مدد اور اس کے تقرب کے بغیر پورا نہ ہو اور اس کام کے لیے شیطان کے شر اور خبثِ نفس کے ساتھ مناسبت ضروری ہو اس کو شرع میں سحر کہتے ہیں۔ اس تعریف سے سحر معجزہ اور کرامت سے ممتاز ہو جاتا ہے۔ بعض اوقات مختلف حیلوں، آلات، دواؤں اور ہاتھ کی صفائی سے بھی عجیب و غریب کام کئے جاتے ہیں وہ سحر نہیں ہیں اور نہ ہی مطلقاً مذموم ہیں ان کو مجازاً سحر کہا جاتا ہے ( شرعاً سحر نہیں)۔
علامہ تفتاذانی فرماتے ہیں
’’ کسی حبیث اور بدکار شخص کے مخصوص عمل کے ذریعے کوئی غیر معمولی اور عام عادت کے خلاف کام یا چیز صادر ہو اسے سحر کہتے ہیں۔ اور یہ باقاعدہ کسی استاد کی تعلیم سے حاصل ہوتا ہے۔ سحر کرنے والا فسق کے ساتھ ملعون ہوتا ہے۔ ظاہری اور باطنی خباثت میں ملوث ہوتا ہے اور دنیا و آخرت میں رسوا ہوتا ہے۔ جادو قرآن و سنت سے ثابت ہے اسی طرح نظر لگنا بھی ثابت ہے۔ ‘‘ خود حضور سید عالم صلی اللہ علیہ وسلم پر بھی جا دو کیا گیا اور اس کے اثر کو زائل آنے کیلئے سورۃ الناس اور سورۃ العلق نازل کی گئیں۔

 

:سحر یا جادو کا شرعی حکم

 

علامہ ابن حمام حنفی فتح القدیر میں رقم طراز ہیں۔ 
سحر ایک حقیقت ہے اور جسم کو تکلیف پہنچانے میں اس کی تاثیر مسلمہ ہے جادو کو سکھانا بالاتفاق حرام ہے اور اس کی اباحت ( جائز) کا اعتقاد کرنا کفر ہے۔ ہمارے بعض آئمہ فقہا امام مالک اور امام احمد رضی اللہ تعالیٰ عنھما کا یہ مذہب ہے کہ جادو سیکھنا اور جادو کرنا کفر ہے خواہ اس کے حرام ہونے کا اعتقاد رکھے یا نہ رکھے۔ اس کو قتل کر دیا جائے گا۔ حضرت عمر بن خطاب حضرت عثمان غنی حضرت عبداللہ ابن عمر حضرت جندب بن عبد اللہ حضرت حسیب بن کعب حضرت قیس بن سعد اور حضرت عمر بن عبدالعزیز رضی اللہ عنھم نے ساحر سے تو بہ طلب کئے بغیر اس کے قتل کا فتویٰ صادر فرمایا۔ حضرت جندب بن رضی اللہ عنہ بیان فرماتے ہیں کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ ساحر کی حد (  سزا) یہ ہے کہ اسے تلوار  سے قتل کر دیا جائے‘‘۔ جس شخص کے بارے میں معلوم ہو کہ   کوشش کرکے جادو کرتا ہے اس سے توبہ طلب کئے بغیر قتل کر دیا جائے۔ حد نافذ کرنے کا اختیار حکومت وقت کا ہے۔ پاکستان جیسے اسلامی ملک میں کالے جادو کے ماہر بنگالی بابے ہزاروں کی تعداد میں دھندناتے پھرتے ہیں پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا پر بھرپور تشہیر کرتے ہیں اور لاکھوں معصوم لوگوں کو تباہ برباد کرتے ہیں لیکن حکومت کے کان پر جوں تک نہیں رینگتی اور پولیس بھی اپنا حصہ وصول کرکے خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے۔

امام ابن قدامہ المقدسی فرماتے ہیں۔ جادو وہ گرہ کلام یامنترہے جو پڑھا یا لکھا جاتا ہے۔ یا کچھ دوسرے طریقوں عمل کیا جاتا ہے۔ جو سحر زدہ شخص کے بدن یا اس کے دل و دماغ پر بلا واسطہ اثر اندار ہوتا ہے (الکافی لابن قدامتہ۳/۳۶۱
امام نووی فرماتے ہیں “صحیح تربات یہ ہے کہ جادو ایک حقیقت ہے جمہور ائمہ کے نزدیک یہ امر قطعی ہے پیشتر علماء بھی اسی بات کے قائل ہیں اور کتاب اللہ و مشہور صحیح سنت ورسول بھی اسی پر دلالت کرتی ہے۔(ووفتح الباری جلد ۰۱ صفحہ ۲۲۲


 اور اس میں منکرین جادو کی زبردست تر دید فرمائی ہے۔(کتا ب الحجۃ۱ /۱۸۴) علام مازری فرماتے ہیں جمہور علماء جادو کی حقیقت کے اثبات کے قائل ہیں۔اور ان میں سے بعض نے اس کی حقیقت کا انکار کیا ہے۔ لیکن سحر کے اثبات ہیں منقول روایات کے وارد ہونے کیو جہ سے یہ رائے قابل رد ہے (المجم بفوائد مسلم لمازری ۳/۳۹)قرآن مجید میں ہے

 اور گنڈوں یا گرہ لگا کر پونکتے والے نفوس کے شر سے بھی

 

پناہ مانگتا   ہے۔حافظ ابن حجر فرماتے ہیں: النّقاثات سے مراد جادو گرنیاں ہیں (فتح الباری ۰۱/۵۲۲)۔ 
علاوہ ازیں کسی بھی مسئلہ میں کسی بھی قسم کی راہنمائی کیلئے فون یا میل کر سکتے ہیں۔ ہمارے پاس انشاء اللہ تعالیٰ آپ کے تمام مسائل کے بے شمار حل موجود ہیں۔

:سحر اور ہر تکلیف کے لیے

سحر اور ہر تکلیف سے بچنے کے لیے صبح وشام تین بار یہ دعا پڑھے اور ہر تکلیف سے محفوظ رہے گا۔

:کالے علم اور ہر قسم کے جادو سے حفاظت

حضرت کعب ؓ فرماتے ہیں کہ چند کلمات اگر میں نہ کہتا تو یہود مجھ کر گدھا بنا دیتے۔ کسی نے پوچھا کہ وہ کلمات کیا ہیں۔ تو انہوں نے یہ بتائے۔

:جادو کے علاج کا ایک مجرب عمل

صبح سورج جب قدرے بلند ہو جائے تو سورۃ عبس و تولیٰ تین بار پڑھیں۔ پڑھ کر اپنے اور یا مریض پر دم کریں اور پانی پر دم کر کے پلائیں۔ مسلسل سات دن تک یہ عمل کریں۔

:سحر اور جادو کا علاج

سات عدد سبز بیری کے پتے لے کر باوضو ان کو دو پتھروں سے پیس لیں۔ ان پسے ہوئے پتوں کو ایک پاک اور صاف بالٹی میں ڈا ل دیں اور گلاس یا مگے سے بالٹی میں پانی ڈالتے جائیں اور آیت الکرسی پڑھتے جائیں گیارہ مرتبہ جب بالٹی پانی سے بھر جائے تو ان پسے ہوئے پتوں کو بالٹی میں اچھی طرح ملا کر حل کرلیں اب مریض کو اس پانی سے تین گھونٹ پانی پلا کر پانی سے اس کووضو کروا دیں یہ عمل تین  دن مسلسل بلا ناغہ کریں انشا ء اللہ سحر اور جادو سے نجات حاصل ہوگی۔


:دفعیہ سحر

جس شخص پر کسی نے سحر کیا ہو ان آیتوں کو لکھ کر گلے میں ڈال دیں یا طشتری پر لکھ کر پلائیں۔

The reality of Alcohol Treatment and Let’s go

Contact us for all kinds of magic cuts

Hazrat Allama Saheeh al-Umrah says that in the era of Salman’s regime, the devils would sit beside heaven and listen to the angel’s angels and when the dead would die and when the other things were again Come and tell the priests and they should be in the same way. People got many lies with him and wrote in the books and became famous in the people that Jinnah knew about the unseen. Solomon sang these books and put them in a box buried under his chair. Now whoever of the devils came near your chair, and Solomon announced that whoever would say that the devil knows knowledge, I will blow his neck. Solomon died and the scholars passed away who knew this event. Then backward passed, one day the devil went to a nation of Israel, in human form and said, “I show you an endless treasure.” He told them to lose the land under this chair, if they lost them, they would get the books out. The devil said that Solomon used to rule on humans, animals, and birds because of this magic. Then the descendants of the people of Israel were known that Solomon was a magician. Even when the Messenger of Allaah (peace and blessings of Allaah be upon him) was an ancestor and did you mention Solomon in the Prophethood, then the Israelites objected and said that Solomon was a magic fall, then Allah Almighty congratulated them. Send down
Translation “and they followed the Shaitan-e-Taleen during Solomon’s era and Solomon did not disbelieve in anything but the Shayatin used to disbelieve. They used to teach people magic. Black Magic Removal

(Al-Baqarah) The Comprehensive Holy Quran, pp. 353)

The meaning of magic (liter) means

Al-Zabaidi Hanifi describes the meaning of magic (Saha) in his book Civilization that it is magic to seduce something from its reality to another reality. Because when a fall falls or the beach displays a false belief in the mind and puts it in mind, then it is a magic of its reality, it is its magic. Black Magic Removal Istikhara

Allama ibn Uthman Akriqi says in Lisa al-‘Abb that Sahar is knowledge which is derived from Satan. And it is done with some help. The observation is also called magic or magic. One thing is seen in some case, although it does not have its original condition (as seen from drainage of water like water), it is also magic to turn on the quality of something. If a person improves an illness or replaces something unhappy in love, he says that he has done magic. (Lissan al-Jab, 4 p 843)

The meaning of magic or sermon is sharp
Hazrat Allama Qazi (may Allaah be pleased with him) said: “I do not fulfill the work which man can do, and he can not fulfill the devil without the help of the devil, It is necessary for a person who is well-pleased with the intellect. From this definition, it becomes possible with miracles and dignity. Sometimes, odd works are also done by different types of instruments, instruments, medicines and hand cleaning, they are not sunlight, nor are they absolute, they are called Mujahideen (not شرك).</p.

All the people say

“It is called Sahar, if something unusual and commonly used by a person and a person who is ill-behaved, or a thing is issued against him. And it comes from a regular education teacher. The smoker is mixed with the Passover. Is involved in apparent and immoral disorder and is spread in the world and in the Hereafter. It is proven to be a sign of magic and Sunnah. “The Prophet (peace and blessings of Allah be upon him) said,” O Allah!

Sharing order of sun or magic 

Allama ibn Hamam is wealthy in Hanifa Fateh al-Qadri.
Sahar is a fact and its effectiveness in distressing the body is Muslim, it is prohibited to teach magic, and it is a disbeliever to believe in it. Some of our Imam Jihad is the Imam of Imam Imam and Imam Ahmad (RA), that he is a disbeliever to learn magic and to make magic or to keep it forbidden. He will be killed. Hazrat Umar bin Khattab, Hazrat Uthman Ghani, Abdullah bin Umar, Jindub bin Abdullah, Haseeb bin Ka’ab, Hazrat Qassay bin Saad, and Umar ibn’Abd al-‘Aziz (may Allaah be pleased with him) issued a fatwa to kill him without asking him to do so. The Prophet (peace and blessings of Allah be upon him) said: “The limit of the sea is to be killed by the sword”. The person who knows who makes magic by trying to be killed without asking repentance. The government has the right to enforce boundaries. Bangladeshi, a black magician, a black magician in Islamic countries like Pakistan, throws thousands of advertisements promoted on print and electronic media and ruin millions of innocent people, but the government does not run on the mines and police also Receiving a silent spectacle is received.

Imam Ibn Qaraam al-Qadri says. The Magic is the Gospel Word, which is read or written. Or some other methods are processed. The effect of an astonished person’s body or his heart is an impairment (Alfafian Laban Conservative 3/361

Imam al-Navy says, “The right thing is that magic is a reality, it is narrated near Jamaat-e-Ama, most of the scholars are convinced of it, and it also mentions the book of Sunnah as well.” (وفتفت البري جلد 01 Page 222
Al-Isma’il al-Latimi al-Subanani, in his book “Al-Hajjah”, has established a permanent chapter “per statement of this verse”, Vishal Akkakhil. And in this it is a great deal of mourning magic. (Dog-ul-Hajj / 1/184) Al-Majari says that the scholars are convinced of the fact that magic is magic. Some of them have denied the fact. However, there is no doubt that there is no doubt about the implications of the narrative traditions. (Al-Muflaf-ul-Fitras (Muslim al-Mahdi 3/39) is in the Qur’an and it is narrated by Shari’al al-Sati al-‘Aqad, and the rites or the neck of the people. The seeker seeks refuge. Ibn al-Hajar says: “The virtues are meant by magic songs (Fateh al-Baqarah 01/522).

Additionally, you can call or mail for any type of guidance in any problem. We have many solutions to all your problems. Black Magic Removal Istikhara 

Sahar and for every pain

To avoid sunset and every pain, pray pray three times a day, and be safe from every pain.

Protecting black knowledge and magic of every kind

Hazrat Ka’b says that if I do not say a few words, the Jews would make me donkeys. Someone asked what they were saying. So they tell it.

The Prophet (peace and blessings of Allaah be upon him) said: “O Allah! I am the Most Merciful, the Most Merciful.”

The reality practice of treating magic

When the sun starts rising in the morning, read Sura Abbas and Toli three times. Pour on your or her patient, and read and fry it on the water. Do this for seven consecutive days.

Sahar and magic treatment

Take two pieces of green berry leaves and grind them with two rocks. Drop these crushed leaves in a clean and clean bucket and put water in the bucket with glass or wagons and read alkalakasi eleven times when bucket is filled with water, then mix these crushed leaves together in a bucket. Now, make the patient drink three bits of water with this water and make this kind of water with water. This process will be three days continuously unbelievable, and Allah will be saved from magic and magic.

Divine Hour:

Writing these verses to the person who has done any harm or stroke or writing on a tattoo.

The movie, the movie, is my life, and my God, my God, the Almighty. Haq al-Haq ul Bakmathah walrah al-Majramoon.

error: Content is protected !!